میانمار کی ہر ممکنہ مدد
فروری 2021 میں میانمار میں اقتدار پر فوجی قبضے کے نتیجے میں پیدا ہونے والے بحران کے تناظر میں جاپان میں لوگوں نے طرح طرح کے امدادی منصوبے شروع کیے ہیں، جو یونیورسٹی طلبا کی گلیوں میں چندہ جمع کرنے کی ہفتہ وار سرگرمی سے لیکر ایک خاتون کی جانب سے ’’میانمار کے لیے بےبی سیٹنگ‘‘ سروس کے آغاز اور، منصفانہ تجارت کو فروغ دینے کے لیے ایک تاجر کی میانمار کافی برآمد تک پھیلے ہوئے ہیں۔ ہم نے ان بنیادی سطح کے امدادی منصوبوں کا جون میں جائزہ لیا جب فوج کے پیدا کردہ بحران کو چار ماہ ہو چکے تھے۔
میاچی آوئی سڑکوں پر چندے کی اپیل کر رہی ہیں۔
وتانابے ناگیسا نے بلامعاوضہ بےبی سیٹنگ سروس کا انتظام کیا ہے۔
اوکُتومی تاکےہیتو میانمار کافی شاپ چلا رہے ہیں۔