اوکیناوا کا پنیر، دنیا میں بہترین بنانے کا ہدف
جاپان کی مرکزی سرزمین کے مغرب میں سمندر کے دور افتادہ پانیوں میں اوکیناوا کے نیم حاری جزائر واقع ہیں۔ امریکی پیدائش رکھنے والی پامیلا آن ماتسوناگا، اکیلے، اپنے پانچ بچوں کی پرورش کا فریضہ انجام دے رہی ہیں۔۔ اپنے بچوں اور اوکیناوا کے لوگوں کے تعاون سے وہ مقامی بکر ی کے دودھ سے دنیا کا بہترین پنیر تیار کرنا چاہ رہی ہیں۔
پامیلا 23 سال کی عمر میں بطور انگلش ٹیچر جاپان آئیں۔ جاپانی شوہر سے طلاق لینے کے بعد انہوں نے یونان میں ایک یونیورسٹی سے پنیر سازی کے عمل میں ماسٹرز کیا۔
پامیلا نے دو ہزار بیس کے اواخر میں اوکیناوا میں کادینا فضائی اڈے کے قریب پنیر کی دکان اور فیکٹری کھولی۔ وہ خاص طور سے بکری کے دودھ کے پنیر کو اپنی فخریہ پیشکش محسوس کرتی ہیں۔
بلاشبہ اوکیناوا میں بکرے کا گوشت طویل عرصہ سے غذائی شے ہے تاہم بکری کے دودھ کا پنیر کافی غیر مستعمل رہا ہے۔
پامیلا کے پانچ بچوں میں، امریکہ میں سکونت پذیر سب سے بڑے فرزند کے علاوہ باقی چاروں والدہ کے ساتھ رہتے اور اس کاروبار میں معاونت کرتے ہیں۔ یقیناً وہ بھی اپنی والدہ کی پنیر مصنوعات کے قدر دان ہیں۔