کیوتو سیکا یونیورسٹی کے افریقی صدر، اوسوبے ساکو
ہم جاپان میں کسی یونیورسٹی کے پہلے افریقی صدر اوسوبے ساکو سے ملاقات کر رہے ہیں۔ وہ جاپانی طلباء اور غیر ملکی طلباء کے مابین باہمی تبادلوں کو فروغ دینے میں مصروف ہیں۔ ان غیر ملکی طلبا کی تعداد میں اضافہ بھی اُن کی کوششوں کے مرہون منت ہے۔ تاہم، عالمگیر وبا تنوع کے لئے تیار ایک یونیورسٹی کے قیام کے اُن کے مقصد کو  مشکل بنا رہی ہے۔
مالی میں پیدا ہونے والی اوسوبے ساکو نے 2018 میں یونیورسٹی کے صدر کے عہدے کے لئے دو جاپانی پروفیسروں کے ساتھ مقابلے میں کامیابی حاصل کی۔
جناب ساکو 1991 میں جاپان آئے اور کیوتو یونیورسٹی سے لوگوں کے مابین باہمی تبادلوں کی حوصلہ افزائی کرنے والے فن تعمیرات پر تحقیق کی ڈگری حاصل کی۔
جناب ساکو اس بات پر پختہ یقین رکھتے ہیں کہ براہ راست تجربے سے سیکھنے کا کوئی ثانی نہیں ہے۔ یہ بات طلباء کے ساتھ میل جول کے ذریعہ اُن پر عیاں ہوئی۔