استعمال شدہ گاڑیوں کا پاکستانی تاجر
جاپان کو اپنا نیا گھر منتخب کرنے والے افراد کی تعداد 28 لاکھ سے زائد کے ساتھ 2019 میں ریکارڈ بلند سطح پر پہنچ گئی۔ یہ جاپان کی آبادی کا دو فیصد ہے۔ وہ ملک میں نئی ​​ثقافتیں متعارف کرتے ہیں تاہم متعدد غیر ملکی یہاں سکونت اختیار کرنے میں مشکلات کا سامنا کرتے ہیں۔ یہ پروگرام ان کی زندگی اور اُن مسائل کی روداد بیان کرتا ہے جس کا انھیں جاپانی معاشرے میں سامنا ہے۔ ایشیاء اور مشرق وسطیٰ کے 600 سے زائد تاجر استعمال شدہ گاڑیوں کی نیلامی کے لئے جمع ہوتے ہیں۔ ایک پاکستانی، میاں محمد صدیق ان میں سے ایک ہیں۔ ہم ان کی روزمرہ مصروفیات کا احاطہ کر رہے ہیں۔
(یہ پروگرام اس سال جولائی کی 14 تاریخ کو پہلی بار نشر کیا گیا۔)
پاکستان سے تعلق رکھنے والے میاں محمد صدیق توچیگی پریفیکچر کے اویاما شہر میں استعمال شدہ ٹرکوں کی تجارت کرتے ہیں۔
اویاما شہر میں استعمال شدہ گاڑیوں کی نیلامی کے موقع پر صدیق بولی لگا رہے ہیں۔
جاپان کی بڑی مساجد میں سے ایک، صدیق سمیت مسلمان رضاکاروں نے تعمیر کی۔