مطالعہ جاپان: ’’ٹیلیفون دھوکہ اور فرنچ ٹوسٹ‘‘ چوتھا حصہ
شوتا جب رقم لینے فلیٹ پر پہنچتا ہے تو، ’’امی‘‘ اُسے طویل مدت سے بچھڑا بیٹا سمجھ کر وارے وارے جاتی ہے۔ اس قدر شفقت اور محبت ملنے کے بعد وہ رقم لیکر نو دو گیارہ نہیں ہونا پاتا اور نوکری ملنے کے بعد روزانہ کی بنیاد پر اُس شفیق خاتون سے ملنے اور گپ شپ کرنے جانے لگتا ہے۔ وہ ایک ساتھ اچھا وقت گزارنے لگتے ہیں۔ ٹی وی دیکھنا، رات کا کھانا کھانا اور گپ شپ لگانا انکا معمول بن جاتا ہے۔ وہ دل لگا کر کام کرتا ہے اور تھوڑا بہت کر کے رقم واپس کرنے لگتا ہے۔ لیکن پھر اچانک کچھ ایسا ہوتا ہے کہ اسکی جھوٹی رشتہ داری کا پول کھلنے کو آتا ہے