کھوج مزیدار ٹوکیو کی، فُو
ہمارا پروگرام ’کھوج مزیدار ٹوکیو کی‘، تسوکیجی اور اسکی جگہ لینے والی تویوسو منڈی سمیت شہر کے بازاروں میں پائے جانے والی وسیع پیمانے کی  غذائی اشیا کا تعارف پیش کرتا ہے۔ اس بار ہم فُو کا جائزہ لے رہے ہیں جو آٹے سے تیار کی جاتی ہے اور جاپانی اسے سینکڑوں سال سے کھاتے چلے آئے ہیں۔ اس میں نشاستہ کم اور پروٹین زیادہ ہے۔ یہ کئی اشکال اور رنگوں میں دستیاب ہے، اس لیے کھانوں کی رنگت زیادہ پرکشش ہو جاتی ہے۔ ہم آپ کو کانازاوا لے جائیں گے جہاں بہت سے لوگ اسے روزانہ کھاتے ہیں۔ ہم فُو کے پکوانوں سے آپکو متعارف کرائیں گے۔ (یہ پروگرام 21 فروری 2020 کو نشر کیا جا چکا ہے)
تسوکیجی کی بیرونی منڈی میں فُو کی کئی اقسام فروخت ہوتی ہیں۔
این ایچ کے ورلڈ جاپان کے رپورٹر جیک فریمین کُورومابُو کا جائزہ لے رہے ہیں جو گلوٹین اور آٹے کے پسے ہوئے آمیزے سے تیار کردہ ہے۔
گیند کی شکل کی تیماری فُو، ریشہ نما فُو کو بُن کر تیار کی جاتی ہے۔
فُو فرنچ ٹوسٹ۔