14 منٹ 42 سیکنڈ

’’داریُوکیو‘‘ – دیوتاؤں اور ڈریگنز کے ڈیزائن کا حامل کانسی کا آئینہ (Daryukyo)

جاپانی شہ پاروں کا طلسم

نشر ہونے کی تاریخ 12 اکتوبر، 2017 دستیابی کی آخری تاریخ 31 مارچ، 2029

اس بار متعارف کرایا جا رہا فن پارہ کانسی کا ایک آئینہ ہے جسے چوتھی صدی میں تخلیق کیا گیا۔ آئینوں میں لوگوں کی شبیہ منعکس کرنے اور آگ جلانے کی طاقت ہوا کرتی تھی، اور قدیم وقتوں میں انہیں مقدّس شے کی سی اہمیت حاصل ہوتی تھی۔ چین سے جاپانی جزائر پر درآمد کیے گئے آئینے، اختیار و اقتدار کی علامت بنے اور مقتدر لوگوں کی قبروں میں اِنہیں تدفین کی اشیاء کے طور پر دفن کیا جاتا تھا۔ یہ مخصوص آئینہ بھی تدفین کے لئے مختص ایک ٹیلے سے کھدائی کے دوران برآمد ہوا تھا۔ 44.5 سینٹی میٹر قطر کا یہ آئینہ مشرقی ایشیاء کے معیارات کے اعتبار سے بڑا ہے اور اسے نہایت مہارت سے ڈھالا گیا تھا۔ جن آئینوں کی بنیاد پر اسے تخلیق کیا گیا تھا، وہ چینی لوگوں کے تصورات کے مطابق دیوتاؤں کی دُنیا کی نمائندگی کرتے تھے، لیکن جاپانی کاریگر اُن علامات کو سمجھنے سے قاصر رہے، سو انہوں نے اس کے بجائے اپنے اصل نقوش اور نمونوں کے مطابق اسے تخلیق کیا۔ یہ ایک ایسا شہ پارہ ہے جو قدیم مشرقی ایشیاء میں ثقافتی تبدیلی کی تاریخ پر روشنی ڈالتا ہے۔

photo

پروگرام کا خاکہ