15 منٹ 04 سیکنڈ

’’ماتسُورانومی یا‘‘ کی داستان (Matsuranomiya Monogatari)

جاپانی شہ پاروں کا طلسم

نشر ہونے کی تاریخ 8 دسمبر، 2016 دستیابی کی آخری تاریخ 31 مارچ، 2029

’’ماتسُورانومی یا‘‘ کی داستان 12 ویں صدی کے اواخر میں، طبقۂ اشرافیہ سے تعلق رکھتے ایک ادیب دانشور فُوجیوارا ۔ نو ۔ تئیکا نے لکھّی۔ یہ کہانی اشرافی طبقے کے ایک لڑکے کی ہے جو چین کا سفر کرتا ہے اور بہت سی غیر معمولی مہمات سے گُزرتا ہے۔ ابتدائی ادبی تخلیقات میں اعلیٰ تلمیحات کے ساتھ لڑائیوں کی منظر کشی، تنازعات اور جاپان کے جنگجو طبقے کے عروج کے حوالے سے تئیکا کے اپنے تجربات کی عکاسی کرتی ہے۔ جس فن پارے کے خد و خال ہمارے زیرِ مطالعہ ہیں، یہ تئیکا کے دَور سے کم و بیش ایک صدی بعد، ہاتھ سے تیار کی جانے والی نقل ہے۔ بیچ کے سالوں میں جاپانی تاریخ ایک عظیم فیصلہ کُن موڑ پر پہنچ چکی تھی۔ یُوں ظاہر ہوتا ہے کہ اس نقل کو تیار کرنے کا مقصد سابق اشرافی ثقافت کا ابلاغ ہے۔ خوبصورت، آرائشی کاغذ کی پیداوار بالآخر معدوم ہو گئی۔ دوسری جانب، ممکن ہے کہ مخصوص رسم الخط، نئے قارئین کے لئے استعمال کیا گیا ہو، تاکہ جنگجُو اور دیگر لوگ بھی اس داستان سے حظ اُٹھا سکیں۔

photo

پروگرام کا خاکہ