برطانیہ کا انگلینڈ میں لاک ڈاؤن کی پابندیاں مارچ سے کم کرنے کا اعلان

برطانوی وزیراعظم بورس جانسن نے انگلینڈ میں کورونا وائرس کے باعث عائد لاک ڈاؤن کی پابندیاں مارچ کے اوائل سے مرحلہ وار نرم کرنا شروع کرنے کے منصوبے کا اعلان کیا ہے۔

جناب جانسن نے چار مرحلوں پر مشتمل روڈ میپ کا اعلان پارلیمان میں پیر کے روز کیا۔ پہلے مرحلے میں تمام اسکول 8 مارچ سے دوبارہ کھولے جائیں گے۔ 29 مارچ سے چھ یا کم افراد کے باہر اجتماع کی اجازت دی جائے گی۔

اگلے مرحلے کا آغاز 12 اپریل سے ہو گا، جس میں روزمرہ ضروریات زندگی میں شامل نہ ہونے والی اشیاء کی دکانوں اور ہیرڈریسرز کو دکانیں دوبارہ کھولنے کی اجازت دی جائے گی۔ مشروبات کی دکانیں اور ریستوران باہر بیٹھے ہوئے گاہکوں کو اشیائے خرد و نوش پیش کر سکیں گے۔

دیگر پابندیوں کو مرحلہ وار اٹھائے جانے کا منصوبہ ہے۔ برطانوی حکومت کے مطابق اس عمل کو ممکنہ طور پر جلد سے جلد 21 جون تک مکمل کیا جا سکے گا۔ بین الاقوامی سفر پر اصولی طور پر دوسرے مرحلے کے خاتمے تک پابندی عائد رہے گی۔

برطانیہ نے کورونا وائرس سے 1 لاکھ 20 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہونے کی اطلاع دی ہے، لیکن نئے کیسز کی یومیہ تعداد میں کمی آ رہی ہے۔

حکومت کے مطابق، دسمبر سے فراہم کی جانے والی ویکسین کے اعداد و شمار سے ظاہر ہوتا ہے کہ فائزر بیون ٹیک ویکسین کے ایک ٹیکے سے کووڈ 19 سے متاثرہ مریضوں کے ہسپتالوں میں داخلے اور اموات میں کم سے کم 75 فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔