چینی بحری جہاز جاپان کی سمندری حدود سے باہر نکل گئے

اطلاعات کے مطابق چین کے دو سرکاری بحری جہاز، بحیرۂ مشرقی چین میں واقع سینکاکُو جزائر کے نزدیک جاپانی پانیوں میں متعدد بار داخل ہونے کے بعد وہاں سے نکل گئے ہیں۔ جاپان کوسٹ گارڈ نے ان دو بحری جہازوں اور جاپان کے سمندری پانیوں سے عین باہر ملحقہ علاقے میں جہاز رانی کرنے والے دیگر دو بحری جہازوں پر نظر رکھی ہوئی تھی۔

کوسٹ گارڈ حکام کا کہنا ہے کہ چاروں جہاز ملحقہ پانیوں میں دیکھے گئے اور اتوار کی علیٰ الصبح پانچ بجے سے کچھ پہلے مذکورہ جزائر میں سے ایک کُباشیما جزیرے کے نزدیکی سمندر میں داخل ہوئے۔

دونوں بحری جہاز بظاہر ایک جاپانی ماہی گیری بوٹ کا پیچھا کر رہے تھے۔ دوپہر 11 بجے کے کچھ دیر بعد وہ اس علاقے سے نکل گئے تاہم تقریباً ڈھائی گھنٹے بعد تائی شو جزیرے کے نزدیک ایک بار پھر جاپانی سمندری حدود میں داخل ہوئے۔

یہ دونوں بحری جہاز رات 8 بجے کے تھوڑی دیر کے بعد جاپانی پانیوں سے باہر چلے گئے۔

یہ جزائر جاپان کے زیر انتظام ہیں۔ چین اور تائیوان ان کی ملکیت کا دعویٰ کرتے ہیں۔ جاپانی حکومت کا مؤقف ہے کہ ان کی خود مختاری کا کوئی حل طلب معاملہ وجود نہیں رکھتا۔