اوساکا پریفیکچر میں فروری کے اواخر میں ہنگامی حالت کے خاتمے کا امکان

مغربی جاپان کے اوساکا پریفیکچر نے فروری کے اختتام پر مرکزی حکومت سے اسے ہنگامی حالت والے علاقوں کی فہرست سے نکالنے کی درخواست کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ہنگامی حالت کورونا وائرس کی وبا پر قابو پانے کے لیے نافذ کی گئی تھی اور اسے دس پریفکچروں میں 7 مارچ تک نافذ رہنا ہے۔

پریفیکچر کے حکام کا کہنا ہے کہ نئے کیسوں کی تعداد اور ہسپتالوں کے بستروں پر شدید بیمار مریضوں کی شرح عمومی طور پر کم ہو رہی ہے۔

تاہم مرکزی حکومت کے ہاں مجموعی تاثر یہ ہے کہ نئے کیسوں کی تعداد میں کمی کی رفتار سست ہو رہی ہے اور وبا پر قابو پانے کے لیے مزید اقدامات کی ضرورت ہے۔

توقع ہے کہ مرکزی حکومت کے حکام اگلے ہفتے کے بعد ماہرین کی آراء سنیں گے اور فیصلہ کریں گے۔