سُوگا یوشی ہیدے کی بطور وزیراعظم پہلی بار جی سیون اجلاس میں شرکت

جاپان کے وزیراعظم سُوگا یوشی ہیدے نے صنعتی ممالک کے گروپ آف سیون سے رواں سال موسم گرما میں ٹوکیو میں اولمپک اور پیرالمپک گیمز منعقد کرانے کے اپنے عزم کا اظہار کیا ہے۔

رہنماؤں نے جاپان کے معیاری وقت کے مطابق جمعہ کی شب 11 بجے سے کچھ دیر بعد ٹیلی کانفرنس منعقد کی۔ جناب سُوگا، امریکی صدر جو بائیڈن اور اطالوی وزیراعظم ماریو دراگھی کی شمولیت والا یہ پہلا جی سیون اجلاس تھا۔

کورونا وائرس کی عالمی وبا کے حوالے سے جناب سُوگا نے کہا کہ ستمبر میں منصب سنبھالنے کے بعد سے ان کا عوام کی زندگی اور روزگار کے تحفظ کا عزم غیر متزلزل رہا ہے۔

جناب سُوگا نے کہا کہ گزشتہ سال کے واقعات سے بہت کچھ سیکھنے کو ملا ہے اور وہ اپنی دانست کے مطابق بہترین اقدامات بروئے عمل لائے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وبا پر قابو پانے کے لیے ویکسینیں کلیدی حیثیت کی حامل ہونگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ ترقی پذیر ممالک کی ویکسین تک منصفانہ رسائی نا گزیر ہو گی۔

جناب سُوگا نے جی سیون ممالک پر ویکسینوں کی تقسیم میں تیزی لانے پر زور دیتے ہوئے صحت کے معاملات کے حوالے سے تحفظ پسندی کے نقطۂ نظر کی مخالفت کرنے کا کہا۔

انہوں نے ویکسینوں کی خریداری کے ایک عالمی فریم ورک کے لیے جاپان کے حصے کو بڑھا کر 20 کروڑ ڈالر کرنے کا عہد کیا۔

جناب سُوگا نے کہا کہ ٹوکیو اولمپکس اور پیرالمپکس اس بات کا ثبوت ہو سکتے ہیں کہ بنی نوع انسان نے کورونا وائرس کی وبا پر قابو پا لیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وہ بین الاقوامی اولمپک کمیٹی کے ساتھ مل کر گیمز کو محفوظ بنانے کے لیے کام کریں گے۔ انہوں نے دیگر ممالک سے مدد کی اپیل کی۔

انہوں نے یہ بھی کہا دیگر رہنماؤں کی حمایت نے انکی ڈھارس بندھائی ہے۔