جاپان میں ٹیکے لگانے کا آغاز، کسی قسم کے مسائل کی اطلاع نہیں ملی

حکومت جاپان نے کہا ہے کہ بدھ کی شام تک صحت دیکھ بھال سے متعلقہ 125 کارکنان کو کورونا وائرس ویکسین کے پہلے ٹیکے لگا دیے گئے ہیں۔ اُس کا کہنا ہے کہ ابھی تک کسی شدید الرجی ردعمل کی کوئی اطلاع موصول نہیں ہوئی۔

جاپان نے ملک میں ٹیکے لگانے کے منصوبے کے تحت ترجیحی گروپوں میں سے اولین کے طور پر بدھ کے روز صحت دیکھ بھال سے متعلقہ تقریباً 40 ہزار کارکنان کو ویکسین کے ٹیکے لگانے کا آغاز کیا ہے۔

کابینہ کے چیف سیکریٹری کاتو کاتسُونوبُو نے جمعرات کے روز گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ روز شام پانچ بجے تک آٹھ طبی اداروں میں 125 ٹیکے لگائے جا چکے تھے۔

جناب کاتو نے بتایا کہ ادویات سازی اور طبی آلات کی ایجنسی، پی ایم ڈی اے کو ٹیکے لگائے جانے کے بعد لوگوں کے ہلاک ہونے یا اُن میں اینافی لیکسز سے موسوم شدید الرجی ردعمل پیدا ہونے کی کوئی اطلاع موصول نہیں ہوئی۔ پی ایم ڈی اے، جاپان میں دواسازی سے متعلقہ چھان بین کرنے کا ذمہ دار ادارہ ہے۔

کابینہ کے چیف سیکریٹری نے مزید کہا کہ وزارتِ صحت کو ٹیکے لگائے جانے سے متعلقہ دیگر مسائل کی کوئی اطلاع نہیں ملی ہے۔