حکومت جاپان ویکسین کے بارے میں عوام کو باخبر رکھے گی

حکومت جاپان نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے ٹیکے لگانے کی بدھ سے شروع کی جانے والی مہم کے بارے میں عوام کو پوری طرح باخبر رکھا جائے گا۔

تقریباً 10 ہزار سے 20 ہزار طبی کارکنان کو سب سے پہلے ویکسین کے ٹیکے لگائے جانے کے بعد معمر اور دیگر افراد کو لگائے جائیں گے۔

حکومت کا کہنا ہے کہ ویکسین کے موثر ہونے اور ان کے ضمنی اثرات سمیت ویکیسنوں کے بارے میں سائنسی بنیادوں پر آسان فہم زبان میں معلومات فراہم کی جائیں گی۔ حکومت ویکسین کے ٹیکے لگانے پر آنے والے تمام اخراجات برداشت کرے گی۔

حکومت کو یقین ہے کہ معیشت کا پہیہ چلتا رکھتے ہوئے، وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے ویکسین کے ٹیکے لگانے کے منصوبے پر بلارکاوٹ علمدرآمد ضروری ہے۔

فی الوقت ٹوکیو، اوساکا اور آٹھ دیگر پریفیکچروں میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے باعث ہنگامی حالت نافذ ہے۔ حکومتی عہدیداروں کے مطابق، انفیکشن کے نئے کیسز کی تعداد میں کمی کی رفتار سست ہو رہی ہے۔

حکام درخواست کر رہے ہیں کہ عوام غیر ضروری طور پر باہر نکلنے سے اجتناب کرنے کے ساتھ ساتھ دفتر آنے جانے والوں کی تعداد میں 70 فیصد کمی کے لیے گھروں سے دفتر کا کام کرنا جاری رکھیں۔