ٹوکیو گیمز انتظامی کمیٹی کے سربراہ موری یوشیرو مستعفی

ٹوکیو اولمپکس کی انتظامی کمیٹی کے سربراہ موری یوشیرو، جو صنفی تعصب پر مبنی اپنے بیان کی وجہ سے تنقید کی زد میں ہیں، انہوں نے اپنا استعفیٰ پیش کر دیا ہے۔

جناب موری نے جمعہ کے روز کمیٹی کے ایگزیکٹو بورڈ اور بورڈ آف کونسلرز کے مشترکہ اجلاس میں شرکت کی۔

انہوں نے کہا کہ جولائی میں ٹوکیو گیمز کا انعقاد انتہائی اہم ہے اور ان کی رائے میں انہیں ان گیمز کی تیاریوں کی کاوشوں میں رکاوٹ نہیں بننا چاہیے۔

جناب موری نے گزشتہ ہفتے کہا تھا کہ جن بورڈ اجلاسوں میں خواتین ہوں ان میں بہت وقت لگتا ہے کیونکہ وہ بہت زیادہ بولتی ہیں۔

اس بیان پر جاپان اور پوری دنیا میں شدید تنقید ہوئی۔ جناب موری نے بیان واپس لے لیا تھا اور معذرت کی تھی۔

جناب موری نے متنازعہ بیان کے حوالے سے اجلاس کے دوران بتایا کہ ان کا خواتین کی توہین کا بالکل کوئی ارادہ نہیں تھا۔ انہوں نے کہا کہ کسی کے معذور ہونے یا نہ ہونے سمیت ہر فرد سے مساوی برتاؤ کرتے ہوئے وہ تبادلہ خیال میں شریک ہوتے رہے ہیں۔

انہوں نے اس امر پر افسوس کا اظہار کیا کہ ان کے اس ناموزوں بیان کی وجہ سے اس قدر مشکل پیش آئی۔