صدر بائیڈن نے صدر شی کو فون پر امریکی تشویش سے آگاہ کیا

امریکہ کے صدر جو بائیڈن نے گزشتہ ماہ اقتدار سنبھالنے کے بعد چین کے صدر شی جن پنگ کے ساتھ ٹیلیفون پر پہلی براہِ راست بات چیت کی ہے۔

وہائٹ ہاؤس نے اعلان کیا ہے کہ دونوں رہنماؤں نے بدھ کے روز ٹیلیفون پر گفتگو کی ہے۔

وہائٹ ہاؤس نے مزید بتایا کہ بائیڈن نے بیجنگ کے جابرانہ اور غیر منصفانہ معاشی طریقوں، ہانگ کانگ میں پکڑ دھکڑ، سنکیانگ میں انسانی حقوق کی پامالی اور تائیوان سمیت خطے میں بڑھتی ہوئی تحکمانہ کارروائیوں کے بارے میں اپنی بنیادی تشویش پر زور دیا۔

وہائٹ ہاؤس کا یہ بھی کہنا تھا کہ بائیڈن اور شی نے دیگر معاملات کے علاوہ کووِڈ 19 کی عالمی وباء اور موسمیاتی تبدیلی سے نبٹنے پر تبادلۂ خیال کیا۔

چین کی حکومت نے ابھی تک کوئی سرکاری بیان جاری نہیں کیا۔ لیکن سرکاری چائنا سینٹرل ٹیلیویژن نے مذکورہ بات چیت کی رپورٹ بریکنگ نیوز کے طور پر دی۔ اس کے مطابق دونوں رہنماؤں نے دوطرفہ تعلقات کے ساتھ ساتھ انتہائی اہمیت کے حامل بین الاقوامی اور علاقائی معاملات پر تبادلۂ خیال کیا ہے۔