حکومت ہنگامی حالت کا نفاذ ختم کرنے پر غور کرے گی

حکومت جاپان رواں ہفتے ماہرین کا اجلاس بلانے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے، جس میں اس بات پر غور کیا جائے گا کہ آیا ایسے علاقے ہیں یا نہیں، جہاں کورونا وائرس کی وجہ سے نافذ کردہ ہنگامی حالت ختم کی جا سکتی ہو۔

حکومت نظرثانی شدہ خصوصی اقدامات کی قانون سازی کے مطابق وائرس کے خلاف اپنے بنیادی اقدامات میں بعض تبدیلیاں کرنے کی تیاری کر رہی ہے۔ یہ قانون سازی ہفتے کے روز سے نافذ ہو گی۔

حکومتی عہدیدار جمعے کے روز ماہرین کی آراء سننے کے بعد اس معاملے پر فیصلہ کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

توقع ہے کہ ماہرین 10 پریفیکچروں میں نافذ کردہ ہنگامی حالت کے بارے میں بھی تبادلہ خیال کریں گے۔ باور کیا جاتا ہے کہ بعض پریفیکچروں میں طے کردہ وقت سے پہلے ہنگامی حالت ختم کیے جانے کے امکان کا بھی جائزہ لیا جائے گا۔

بعض حکام کے مطابق، وسطی جاپان میں واقع آئچی اور گفو پریفیکچروں میں بہتر ہوتے ہوئے حالات کی وجہ سے ہنگامی حالت ختم کرنے کا امکان بڑھتا جا رہا ہے ۔ لیکن حکومت احتیاط کا مظاہرہ کرنے کا ارادہ رکھتی ہے کیونکہ ان علاقوں کے طبی وسائل بدستور دباؤ کا سامنا کر رہے ہیں۔