جناب موری کا بیان قومی مفادات کے منافی ہے: جاپانی وزیر اعظم

جاپان کے وزیر اعظم سُوگا یوشی ہیدے نے تسلیم کیا ہے کہ ٹوکیو اولمپکس و پیرالمپکس کی انتظامی کمیٹی کے سربراہ موری یوشیرو کا خواتین سے متعلق بیان قومی مفادات کے منافی ہے۔ وزیر اعظم نے یہ بات ایوانِ زیریں کی بجٹ کمیٹی کے اجلاس میں پیر کے روز کہی ہے۔

جناب موری نے گزشتہ ہفتے جاپان کی اولمپک کمیٹی کے ایک اجلاس میں کہا تھا کہ بورڈ اجلاسوں میں خواتین کی موجودگی سے زیادہ وقت لگتا ہے۔ بعد ازاں انہوں نے اپنے الفاظ واپس لے لیے تھے اور معذرت کی تھی۔

وزیر اعظم سُوگا نے کہا کہ جناب موری کے الفاظ اولمپک و پیرالمپک کھیلوں کے صنفی مساوات کے بنیادی اصول کے برعکس ہیں اور ان سے صرفِ نظر نہیں کیا جا سکتا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ان کے خیال میں یہ بیان قومی مفادات کے بھی منافی ہے۔

تاہم، وزیر اعظم نے اس بارے میں کچھ کہنے سے گریز کیا کہ آیا جناب موری کو ان کے منصب پر برقرار رہنا چاہیے یا نہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ ٹوکیو اولمپکس و پیرالمپکس کی انتظامی کمیٹی کو طے کرنا چاہیے جو حکومت سے الگ ایک آزاد ادارہ ہے۔

جناب سُوگا نے مزید کہا کہ وہ اس بات سے واقف ہیں کہ بین الاقوامی اولمپک کمیٹی نے جناب موری کے بیان پر ان کی معذرت کو قبول کر لیا ہے اور اس کے نزدیک یہ معاملہ ختم ہو چکا ہے۔