جاپان میں انسداد کورونا وائرس اقدامات پر غور و خوض کے لیے گورنروں کا اجلاس

کورونا وائرس کے باعث عائد ہنگامی حالت میں توسیع کے بعد جاپان میں گورنروں نے ہفتے کے روز ایک آن لائن اجلاس میں ملاقات کی ہے۔ ان میں سے بعض نے تجویز دی کہ ہنگامی حالت کو مرحلہ وار ختم کیا جانا چاہئے۔

مرکزی حکومت نے ٹوکیو اوساکا اور کاناگاوا سمیت دس پریفیکچروں کے لیے ہنگامی حالت میں 7 مارچ تک توسیع کر دی ہے۔

کاناگاوا کے گورنر کُروئیوا یُوجی نے کہا کہ آئندہ ہفتے لاگو ہونے والے کورونا وائرس کے لیے خصوصی اقدامات کے ترمیم شدہ قانون کا اطلاق احتیاط کا متقاضی ہے۔ انہوں نے مرکزی حکومت کو متعین کردہ احکامات اور سزاؤں کے حوالے سے رہنمائی فراہم کرنے کا کہا۔

آؤموری کے گورنر میمُورا شِنگو نے کہا کہ ہنگامی حالت کے تحت آنے والے علاقوں کے کاروباری اداراوں کے علاوہ بھی کئی کاروبار ہنگامی حالت سے متاثر ہوئے ہیں۔

کئی گورنروں نے مرکزی حکومت سے معیشت اور روزگار سے متعلق مزید اقدامات کرنے کو کہا۔ انہوں نے مرکزی حکومت کو ویکسینیشن پلان کے بارے میں جلد مزید معلومات فراہم کرنے کا بھی کہا۔

گورنروں کی قومی انجمن، ہنگامی حالت کے اعلان میں شامل علاقوں کے علاوہ دیگر علاقوں کے کاروباری افراد اور کارکنوں کے لیے بھی حکومتی امداد کی درخواست کرنے کے لیے، ہنگامی تجاویز مرتب کر رہی ہے۔