ٹی پی پی میں برطانیہ کی شمولیت سب کے لیے سُود مند ہوگی: برطانوی وزیر

برطانوی کابینہ کی ایک وزیر نے کہا ہے کہ انہیں یقین ہے کہ بحرالکاہل کے آرپار شراکتداری، ٹی پی پی میں ان کے ملک کی شمولیت، برطانیہ اور ایشیاء بحرالکاہل خطے میں اس کے تجارتی شراکتداروں کیلئے بھی مساوی طور پر سُود مند ہوگی۔

برطانوی وزیر برائے بین الاقوامی تجارت الزبتھ ٹراس نے اقتصادی احیاء کے جاپانی وزیر نشی مُورا یاسُوتوشی سے پیر کے روز آن لائن بات چیت کی۔ جاپان اس سال تجارتی سمجھوتے کی سربراہی کر رہا ہے۔

محترمہ ٹراس نے انکشاف کیا کہ ان کی حکومت نے ٹی پی پی میں شمولیت کیلئے باضابطہ درخواست دیدی ہے۔ انہوں نے کہا کہ درخواست منظور کر لی جائے۔

جناب نشی مُورا نے کہا کہ وہ برطانیہ کی درخواست کا خیرمقدم کرتے ہیں جو بقول انکے یکساں بنیادی اقدار کا حامل عالمی، اسٹراٹیجک شراکتدار ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ تجارت کے اعلیٰ سطحی بین الاقوامی ضوابط اور سرمایہ کاری کو، ممکنہ طور پر ایشیا بحرالکاہل خطے سے آگے وسعت دینے کی جانب ایک قدم ہو سکتا ہے۔

جناب نشی مُورا نے کہا کہ جاپان اس بات کو یقینی بنانے کی کوشش کرے گا کہ برطانیہ کی درخواست کا مرحلہ ہموار انداز میں انجام پائے۔

حکومت جاپان اس مرحلے پر پیشرفت کیلئے عنقریب ٹی پی پی رکن ممالک کا ایک پینل اجلاس بلانے کا منصوبہ رکھتی ہے۔