جاپان کے وزیر خارجہ کا آن سان سوچی کی رہائی کا مطالبہ

جاپان کے وزیر خارجہ موتیگی توشی مِتسُو نے میانمار کی فوج پر زور دیا ہے کہ اسٹیٹ کاؤنسلر آن سان سوچی اور دیگر رہنماؤں کو رہا کیا جائے۔

جناب موتیگی نے پیر کے روز جاری کردہ ایک بیان میں کہا ہے کہ حکومت جاپان کو شدید تشویش ہے کہ میانمار میں ہنگامی حالت نافذ کرنے کا اعلان کر دیا گیا ہے اور اس ملک کی جمہوریت سازی کے عمل کو خطرہ لاحق ہو رہا ہے۔

وزیر خارجہ موتیگی نے مزید کہا کہ جاپان نے میانمار میں جمہوریت سازی کے عمل کی مکمل حمایت کی ہے اور اس کے خلاف اقدامات کی مخالفت کرتا ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ حکومت، میانمار کی فوج پر سختی سے زور دیتی ہے کہ جمہوری سیاسی نظام کو فوری طور پر بحال کیا جائے۔