فائزر نے کورونا ویکسین کی طبی آزمائش کا ڈیٹا جاپانی وزارت صحت کو جمع کرا دیا

این ایچ کے کو معلوم ہوا ہے کہ امریکی دوا ساز کمپنی فائزر نے کورونا وائرس کی اپنی ویکسین کی جاپان میں ہونے والی طبی آزمائش کے اعداد و شمار جاپان کی وزارت صحت کو جمع کروا دیے ہیں۔ وزارت اگلے مہینے اس ویکسین کی منظوری دینے یا نہ دینے کا ارادہ رکھتی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ فائزر نے طبی آزمائش کے اعداد و شمار جمعہ کے روز جمع کرائے۔ اس آزمائش میں 20 سال یا اس سے زائد العمر ایک سو 60 افراد نے حصہ لیا۔

فائزر واحد کمپنی ہے جس نے جاپان میں کووڈ 19 کی ویکسین کی منظوری کے لیے درخواست دی ہے۔

فائزر، حکومت جاپان کے ساتھ ایک سمجھوتے پر پہلے ہی دستخط کر چکی ہے جس کے تحت رواں سال 7 کروڑ 20 لاکھ افراد کے لیے درکار ویکسین فراہم کی جائے گی۔

حکام کا کہنا ہے کہ ابتدائی طور پر کمپنی نے اس طبی آزمائش کا ڈیٹا فروری کے آخر تک مرتب کرنے کا منصوبہ بنایا تھا تاہم حکومتی درخواست پر منصوبے کے برعکس اس نے یہ معلومات رواں ماہ ہی جمع کروا دیں۔

وزارت صحت پہلے ہی اس ویکسین کے جاپان سے باہر کیے گئے طبی تجربات سے حاصل ہونے والے ڈیٹا کی بنیاد پر اسکا جائزہ لے رہی تھی۔ وزارت حتمی فیصلے کے لیے آئندہ ماہ ماہرین کا ایک اجلاس منعقد کرنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔

منظوری کی صورت میں حکومت ماہ فروری کے اواخر میں طبی عملے کو ویکسین کے حفاظتی ٹیکے لگانے کے آغاز کا منصوبہ رکھتی ہے۔