جاپان اور جنوبی کوریا کا قریبی تعاون جاری رکھنے پر اتفاق

جاپان اور جنوبی کوریا کے رہنماؤں نے شمالی کوریا کے معاملات پر امریکہ کے ساتھ قریبی رابطہ کاری جاری رکھنے پر اتفاق کیا ہے۔ انہوں نے اس بات کی بھی توثیق کی ہے کہ دونوں ممالک اپنے دو طرفہ تعلقات کو اگلے سال تک نئی بلندیوں پر لے جائیں گے۔ جاپان اور جنوبی کوریا کے تعلقات کے معمول پر آنے کی 60ویں سالگرہ 2025 میں منائی جائے گی۔

جاپانی وزیراعظم کشیدا فومیو اور جنوبی کوریا کے صدر یُون سون نیئول نے بدھ کے روز امریکہ میں نیٹو سربراہ اجلاس کے موقع پر علیحدہ بات چیت کی۔

جناب کشیدا نے کہا کہ موجودہ بین الاقوامی صورتحال میں دونوں رہنماؤں کا ایک دوسرے کے ساتھ قریبی تعاون کرنا نتیجہ خیز ثابت ہو گا کیونکہ دونوں ممالک کے درمیان قوی اعتماد تشکیل پا رہا ہے اور تزویراتی نقطہ نظر بھی مشترک ہے۔

انہوں نے امید ظاہر کی کہ وہ اور جنوبی کوریائی صدر شمالی کوریا کی صورتحال کے ساتھ ساتھ دیگر عالمی چیلنجوں سمیت مختلف سلامتی امور پر کھلے دل سے تبادلہ خیال کریں گے۔

جاپانی وزیراعظم نے زور دے کر کہا کہ جاپان کو روس اور شمالی کوریا کے گزشتہ ماہ کے سربراہ اجلاس سے علاقائی سلامتی پر ہونے والے اثرات کے حوالے سے شدید تشویش ہے۔

جناب کشیدا اور صدریُون اس بات پر متفق تھے کہ یورپ اور ہند بحرالکاہل خطے کی سلامتی ایک دوسرے سے الگ نہیں۔ انہوں نے نیٹو کے ساتھ تعاون کو مزید مضبوط بنانے کا عزم کیا۔