جاپان کا رواں فاضل کھاتہ مئی میں ریکارڈ بلندی پر

جاپان کی وزارتِ خزانہ کا کہنا ہے کہ مئی کے لیے ملک کا رواں فاضل کھاتہ اِس مہینے کے لیے بلند ترین سطح پر پہنچ گیا۔

اِس اضافے کی وجہ یہ ہے کہ بیرونِ ملک سُود کی بلند شرحوں اور کمزور ین کے باعث غیرملکی بانڈ ہولڈنگز سے کمپنیوں کو ہونے والی آمدنی میں اضافہ ہوا۔

سرپلس یعنی فاضل حجم 28 کھرب 50 ارب ین یعنی 17 ارب 70 کروڑ ڈالر رہا۔ یہ گزشتہ سال کے مقابلے میں 41 فیصد کا اضافہ اور 1985ء میں تقابلی اعداد و شمار دستیاب ہونے کے بعد مئی کا بلند ترین ہے۔ جاپان کا کھاتہ اب مسلسل 16 مہینوں کے لیے فاضل رہا ہے۔

پرائمری آمدنی کا فاضل 26 ارب ڈالر رہا، جو کسی بھی مہینے کے لیے ایک ریکارڈ بلند حجم ہے۔

اس حجم میں جاپانی کاروباروں کو بیرونِ ملک ذیلی کمپنیوں سے حاصل ہونے والے منافعے کے ساتھ ساتھ بانڈز پر سُود کی آمدنی بھی شامل ہے۔

آٹوموبائلز اور سیمی کنڈکٹر ساز آلات کی مضبوط برآمدات کی بدولت تجارتی خسارہ سُکڑ کر 6 ارب 90 کروڑ ڈالر ہو گیا۔

خدمات توازن نے ایک کروڑ 40 لاکھ ڈالر کے فاضل حجم کے ساتھ دو مہینوں میں پہلی بار منافع ظاہر کیا۔

یہ جاپان آنے والے سیاحوں کی تعداد میں اضافے کی وجہ سے سفری کھاتے میں حاصل ہونے والے منافعے کو ظاہر کرتا ہے۔