سابق جاپانی وزیر اعظم آبے شنزو کے قتل کو 2 سال مکمل

مغربی شہر نارا میں لوگ اس مقام پر پھول چڑھا رہے ہیں، جہاں ٹھیک دو سال قبل جاپان کے سابق وزیر اعظم آبے شنزو کو انتخابی مہم کے ایک خطاب کے دوران گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔

فائرنگ کا یہ واقعہ 8 جولائی 2022 کو یاماتو سائیدائیجی اسٹیشن کے قریب ایک علاقے میں پیش آیا تھا۔

جائے وقوع پر چڑھائے جانے والے پھولوں کے لیے اتوار کے روز ایک خیمہ نصب کیا گیا۔ اس کا اہتمام مرکزی حکمران لبرل ڈیموکریٹک پارٹی کی نارا پریفیکچر شاخ نے کیا تھا۔

43 سالہ یاماگامی تیتسُویا پر قتل اور غیر قانونی ہتھیار رکھنے سمیت دیگر الزامات میں فردِ جرم عائد کی گئی تھی۔

اطلاعات کے مطابق یاماگامی نے تفتیش کاروں کو بتایا کہ آبے پر حملے کی وجہ اس کا یہ خیال تھا کہ سابق وزیر اعظم کے اُس مذہبی گروپ سے قریبی مراسم تھے جسے پہلے یونیفیکیشن چرچ کہا جاتا تھا۔ اس نے مبینہ طور پر کہا کہ اس کی ماں کی طرف سے مذہبی گروپ کو بڑی رقم عطیہ کرنے کے بعد اُسے اِس گروپ سے نفرت ہو گئی تھی۔

نارا ضلعی عدالت میں پہلی سماعت سے قبل شواہد اور دلائل کے نکات جیسے اہم معاملات منظم کرنے کے لیے اب تک چار بار مقدمے کی سماعت سے پہلے کا طریقہ کار منعقد کیا گیا ہے۔

امکان ہے کہ مقدمے کی سماعت عام شہریوں سے کسی تخصیص کے بغیر منتخب کردہ معاون ججز پر مشتمل عدالت میں ہو گی، تاہم مقدمے کی تاریخ کا فیصلہ ہونا ابھی باقی ہے۔ وکیلِ دفاع کو توقع ہے کہ پہلی سماعت 2025 میں یا اس کے بعد ہو گی۔