جاپان اور کمبوڈیا، یوکرین میں بارودی سرنگوں کی صفائی میں تعاون پر متفق

جاپان اور کمبوڈیا نے یوکرین اور دیگر ممالک میں بارُودی سرنگیں صاف کرنے کے لیے مل کر کام کرنے پر اتفاق کیا ہے۔

یہ اتفاقِ رائے جاپان کی وزیرِ خارجہ کامی کاوا یوکو کی ہفتے کے روز مذکورہ جنوب مشرقی ایشیائی ملک کے دورے کے دوران کمبوڈیا کے نائب وزیرِ اعظم اور وزیر خارجہ سوک چیندا ساؤپِیا سے ملاقات کے موقع پر ہوا ہے۔

دونوں وزراء نے کمبوڈیا میں دھماکا خیز ہتھیاروں کو صاف کرنے کے جاپان کے سالوں کے تجربے کی بنیاد پر یوکرین سمیت تیسرے ملکوں میں بارودی سرنگوں کی صفائی میں دو طرفہ تعاون کا اقدام شروع کرنے کا اعلان کیا۔

مخصوص اقدامات میں کمبوڈیا میں بارودی سرنگوں کے خاتمے کے اقدامات کے لیے بین الاقوامی ٹیم کی تشکیل شامل ہے۔

بارودی سرنگوں کو ہٹانے کے آلات کی تیاری مصنوعی ذہانت اور دیگر جدید ٹیکنالوجیز کا استعمال کرتے ہوئے نجی کمپنیوں کے ساتھ مشترکہ طور پر کی جائے گی۔

وزیرِ خارجہ کامی کاوا نے ایک مشترکہ اخباری کانفرنس میں کہا کہ اب بھی دنیا بھر میں لوگ بارودی سرنگوں کی بھینٹ چڑھ رہے ہیں۔

اُنہوں نے کہا کہ جاپان نے کئی سالوں سے بارودی سرنگوں سے چھٹکارا پانے کی کمبوڈیا کی کوششوں میں مدد کی ہے۔ اُن کا کہنا تھا کہ دونوں ملک اپنی کوششوں کی بدولت جمع کردہ تکنیک اور علم کی بنیاد پر مل کر کام کر سکتے ہیں۔

دونوں وزراء نے پانی اور سیوریج کے نظام اور ٹیلی مواصلات کے بنیادی ڈھانچے کی تعمیر میں تعاون کرنے پر بھی اتفاقِ رائے کیا، جن میں 5G موبائل نیٹ ورکس کے ساتھ ساتھ کمبوڈیا میں سائبر سلامتی کے شعبے شامل ہیں۔

جاپان، خطّے میں نظم و انصرام کے ایک اڈّے کے طور پر کمبوڈیا کی بندرگاہ کی ترقی میں کردار ادا کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔