بائیڈن کا صدارتی دوڑ میں شامل رہنے کا عزم

امریکی صدر جو بائیڈن نے جمعہ کو شدید مقابلے والی ریاست وسکونسن کا دورہ کیا تاکہ ووٹرز کو بتایا جائے کہ وہ صدارتی دوڑ میں شامل ہیں۔ انہوں نے وہاں تقریر کی اور وعدہ کیا کہ وہ "ڈونلڈ ٹرمپ کو شکست دیں گے"۔

بائیڈن ان لوگوں سے اتفاق نہیں کر رہے ہیں جو کہتے ہیں کہ انہیں نومبر کے انتخابات سے دستبردار ہو جانا چاہئے۔ سابق صدر کے خلاف گزشتہ ہفتے ٹیلی ویژن پر ہونے والے مباحثے میں خراب کارکردگی کے بعد انہوں نے یہ مطالبہ اپنی ہی ڈیموکریٹک پارٹی کے ارکان سے بھی سنا ہے۔

بائیڈن نے جمعہ کو وسکونسن میں ایک ریلی نکالی، جہاں وہ ووٹروں کی حمایت کو برقرار رکھنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ ڈیموکریٹک امیدوار ہلیری کلنٹن کے ٹرمپ سے ہارنے کے چار سال بعد، انہوں نے 2020 کے انتخابات میں اس ریاست میں فتح حاصل کی تھی۔ انہوں نے حامیوں کو بتایا کہ وہ "انتخابی دوڑ کا حصہ ہیں اور دوبارہ جیتیں گے"۔

بائیڈن نے کہا کہ وہ ایک مباحثے کو "ساڑھے تین سال کی محنت" ختم نہیں کرنے دیں گے۔ انہوں نے ٹرمپ کے دوبارہ صدر بننے کے خطرات پر زور دیتے ہوئے انہیں امریکی تاریخ میں جمہوریت کے لیے "سب سے بڑا خطرہ" قرار دیا۔

بہت سے جائزوں میں اب ان کے حریف آگے دکھائی دیتے ہیں۔ ریئل کلیئر پولیٹکس نامی ایک گروپ نے جمعہ کو ان جائزوں کا اوسط نکالا، جس میں ٹرمپ کو 47.5 فیصد اور بائیڈن کو 44.2 فیصد حمایت ملی۔