تائیوان کے سابق نائب وزیراعظم رشوت کے الزام میں زیر تفتیش

تائیوان کے استغاثہ حکام ایک سابق نائب وزیراعظم اور حکمران ڈیموکریٹک پروگریسو پارٹی کی سینئر شخصیت سے رشوت ستانی کے شبے میں تفتیش کر رہے ہیں۔

تاؤیُوآن شہر کے استغاثہ نے ہفتے کے روز اعلان کیا کہ چینگ وین سان پر اپنے سرکاری فرائض کے سلسلے میں رشوت وصول کرنے کا شبہ ہے۔

تائیوان کے میڈیا کا کہنا ہے کہ مبینہ بدعنوانی میں تاؤیوان کے میئر کی حیثیت سے ان کے دور میں ترقیاتی منصوبے شامل ہو سکتے ہیں۔

چینگ اب اسٹریٹس ایکسچینج فاؤنڈیشن کے سربراہ ہیں، جو چین کے ساتھ تائیوان کا رابطہ دفتر ہے۔

فاؤنڈیشن کا کہنا ہے کہ چینگ نے اپنے وکیل کے ذریعے ایک بیان جاری کیا، جس میں اس بات پر زور دیا گیا کہ انہوں نے کوئی غیر قانونی کام نہیں کیا ہے اور وہ عدالتی تحقیقات میں تعاون کریں گے۔

اطلاعات کے مطابق، چینگ نے مزید کہا کہ وہ سچائی کو واضح کرنے اور جلد از جلد اپنی بے گناہی ثابت کرنے کی امید رکھتے ہیں۔

پچھلے سال جون میں انہوں نے جاپان کا دورہ کیا تھا، جو تائیوان کے حاضر نائب وزیراعظم کے لیے غیر معمولی ہے۔

ایوان میں اکثریت کی حامل تائیوان کی اپوزیشن جماعتوں کا کہنا ہے کہ ڈی پی پی کرپٹ ہے۔

وہ ایک قانونی ترمیم کے ذریعے مقننہ کے تحقیقاتی اختیار کو وسعت دینے کے لیے کام کر رہی ہیں۔

توقع ہے کہ اپوزیشن صدر لائی چنگ تے کی حکومت پر دباؤ بڑھائے گی۔