مودی پوٹن سے بات چیت کے لیے روس جائیں گے

بھارت کے وزیراعظم نریندر مودی اگلے ہفتے روس کا دورہ کرنے والے ہیں جہاں وہ صدر ولادیمیر پوٹن سے ملاقات کریں گے۔ یہ دورہ ایسے وقت ہو رہا ہے جب امریکہ اور دیگر مغربی ممالک، یوکرین پر روسی حملے کے سبب ماسکو کو دنیا میں تنہا کرنے کے لیے سرگرداں ہیں۔

بھارتی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ مودی پیر سے دو روزہ دورہ شروع کریں گے اور پوٹن سے مذاکرات کریں گے۔ روس یوکرین جنگ شروع ہونے کے بعد یہ مودی کا روس کا پہلا سرکاری دورہ ہو گا۔

بھارت، دفاع جیسے شعبوں میں روس کا روایتی شراکت دار ہے۔ اس نے غیر جانبدارانہ مؤقف برقرار رکھتے ہوئے، یوکرین سے روسی افواج کے فوری انخلاء کا مطالبہ کرنے والی اقوام متحدہ کی قراردادوں کے حق میں ووٹ دینے سے کئی بار اجتناب کیا ہے۔ دوسری جانب وہ ماسکو کے ساتھ اقتصادی تعلقات کو مضبوط کر رہا ہے اور روسی تیل کی درآمدات میں اضافہ کر رہا ہے۔

روسی حکومت کا کہنا ہے کہ بات چیت میں دونوں ملکوں کے درمیان روایتی دوستانہ تعلقات کو تقویت دینے کے ساتھ ساتھ علاقائی اور بین الاقوامی امور پر توجہ مرکوز کی جائے گی۔

مبصرین کا کہنا ہے کہ پوٹن ایسے حالات میں مودی کا اعتماد حاصل کرنا چاہ رہے ہیں جب مغرب سے انکے اختلافات بڑھتے جا رہے ہیں۔