امریکی فوج پہلی بار F-35 لڑاکا طیارے جاپان میں تعینات کرے گی

امریکی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ وہ جاپان میں تعینات ٹیکٹیکل طیاروں کی جدید کاری کے منصوبے کے ایک حصے کے طور پر پہلی بار شمالی جاپان کے میساوا ایئر بیس پر F-35 اسٹیلتھ جنگی طیارے تعینات کرے گی۔

پینٹاگون نے بدھ کے روز اعلان کیا کہ امریکی فضائیہ آؤموری پریفیکچر کے میساوا بیس پر موجود 36 ایف سولہ طیاروں کی جگہ اڑتالیس F-35 لڑاکا طیارے تعینات کرے گی۔

F-35 پانچویں پشت کے بمبار طیارے ہیں جو جدید ریڈار سے بچنے کی صلاحیت اور دشمن کے خطرات کا فوری پتہ لگانے کے نظام سے لیس ہیں۔

جاپان کی فضائی سیلف ڈیفنس فورس نے پہلے ہی میساوا ایئر بیس پر F-35 طیارے تعینات کر رکھے ہیں۔

امریکی وزارتِ دفاع نے یہ اعلان بھی کیا کہ امریکی فضائیہ جنوبی جاپان کے اوکیناوا پریفیکچر کے کادینا ایئر بیس پر ریٹائر ہونے والے اڑتالیس F-15 طیاروں کی جگہ جدید تر بنائے گئے چھتیس F-15 طیارے تعینات کرے گی۔

وزارت کے مطابق جدید کاری کا منصوبہ اگلے کئی سال میں نافذ کیا جائے گا اور یہ صلاحیت میں اضافے کے لیے 10 ارب ڈالر سے زیادہ کی سرمایہ کاری کی عکاسی کرتا ہے۔

اس کا کہنا ہے کہ یہ منصوبہ امریکہ جاپان اتحاد، علاقائی دفاعی صلاحیتوں اور ہند بحرالکاہل خطے میں امن و استحکام کو تقویت دے گا۔