نیویارک ٹائمز کا بائیڈن سے صدارتی دوڑ سے دستبردار ہونے کا مطالبہ

نیویارک ٹائمز نے ایک اداریے میں صدر جو بائیڈن سے ٹی وی پر ہونے والے مباحثے کے بعد ان کی "ناہموار صلاحیتوں" کی طرف اشارہ کرتے ہوئے صدارتی دوڑ سے دستبردار ہونے کا مطالبہ کیا ہے۔

معروف امریکی اخبار نے جمعہ کے روز ایک اداریہ شائع کیا جس کا عنوان تھا، "اپنے ملک کی خدمت کے لیے صدر بائیڈن کو دوڑ چھوڑ دینی چاہیے"۔

سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ساتھ جمعرات کے مباحثے کے دوران، بائیڈن کی آواز نا ہموار ہو گئی تھی۔ وہ کئی سیکنڈ تک الفاظ کے لیے کھو گئے اور ٹرمپ کی تنقید کا مقابلہ کرنے کے لیے اکثر مشکل میں نظر آئے۔

اطلاعات کے مطابق، بائیڈن کی کارکردگی نے کچھ ڈیموکریٹس کو ان کے نامزد امیدوار کے طور پر مقرر کرنے کے بارے میں شکوک و شبہات کا اظہار کرنے پر مائل کیا۔

نیویارک ٹائمز کے اداریے میں کہا گیا ہے کہ ملک کو ٹرمپ سے جو خطرہ لاحق ہے، اس کے لیے بائیڈن کی ناہموار صلاحیتوں کو دیکھتے ہوئے، امریکہ کو ممکنہ ریپبلکن امیدوار کے مقابلے کے لیے ایک مضبوط حریف کی ضرورت ہے۔

اس میں کہا گیا ہے، "انتخابی مہم میں اتنی دیر سے نئے ڈیموکریٹک امیدوار کا مطالبہ کرنا ایک ایسا فیصلہ ہے جسے ہلکا نہیں لیا جانا چاہیے"۔

لیکن اس میں کہا گیا ہے کہ ڈیموکریٹس کے لیے سب سے واضح راستہ یہ تسلیم کرنا ہے کہ بائیڈن اپنی دوڑ جاری نہیں رکھ سکتے، اور نومبر میں ٹرمپ کو شکست دینے کے لیے ان کی جگہ کسی زیادہ اہل امیدوار کو منتخب کرنے کے لیے ایک عمل تشکیل دیں۔

بائیڈن نے اس دوران مقابلے کا عزم ظاہر کیا ہے۔ انہوں نے جمعہ کو جنوبی ریاست شمالی کیرولائنا میں کہا، "جب آپ نیچے گر جاتے ہیں، تو آپ واپس اٹھ جاتے ہیں"۔