سری لنکا قرضوں کی ری اسٹرکچرنگ کے منصوبے پر متفق

سری لنکا اور قرض دینے والے ممالک کے درمیان قرضوں کی ری اسٹرکچرنگ کا معاہدہ طے پا گیا ہے جس میں تقریباً چھ ارب ڈالر شامل ہیں۔ بدھ کے روز طے پانے والے معاہدے کو اِس جنوبی ایشیائی ملک کی معیشت کو مستحکم کرنے کی کلید کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔

سری لنکا نے اپریل 2022 میں بیرونی قرضوں کی ادائیگی معطل کردی تھی۔ اس کے بعد مالیاتی پالیسی کی ناکامیوں اور دیگر عوامل کے سبب ملک کی کرنسی کی قدر میں تیزی سے گراوٹ آئی اور افراط زر میں اضافہ ہوا۔

جاپان، بھارت اور فرانس کے شروع کردہ ایک فریم ورک کے تحت، قرض دینے والے 17 ممالک گزشتہ سال سے قرضوں کی ری اسٹرکچرنگ کے مذاکرات میں شامل ہیں۔

اس معاہدے کے تحت جاپان اور دیگر قرض دینے والے ممالک ادائیگیوں کی تاریخوں میں توسیع اور شرح سود میں کمی کریں گے۔ یہ منصوبہ تقریباً 5 ارب 80 کروڑ ڈالر کے قرضوں کا احاطہ کرتا ہے۔