ڈالر کے مقابلے میں ین کی قدر 160 کی بالائی حد تک کمزور

بدھ کے روز ایک مرحلے پر نیویارک میں ڈالر کے مقابلے میں ین کی قدر 160 کی بالائی حد تک کم ہو گئی۔ جاپانی کرنسی کی قدر میں یہ سطح 37 سال سے نہیں دیکھی گئی تھی۔

ایک موقع پر یورو کے مقابلے میں بھی ین کی قدر 171 کی بالائی حد تک کم ہو گئی۔ سنہ 1999 میں مشترکہ یورپی کرنسی متعارف ہونے کے بعد سے یہ بھی ین کی کم ترین قدر ہے۔

امریکی فیڈرل ریزور یعنی مرکزی بینک کے ایک سینئر اہلکار نے منگل کو شرح سود میں جلد کمی کے بارے میں محتاط مؤقف کا اظہار کیا جس کے بعد بدھ کے روز سرمایہ کاروں میں اس خیال نے زور پکڑا کہ امریکی فیڈرل ریزرو کو شرح سود میں کمی کی کوئی جلدی نہیں ہے۔

سرمایہ کاروں نے جواباً لندن ایکسچینج میں جاپانی کرنسی فروخت کی، جس سے اس کی قدر اپریل کی 160.24 فی ڈالر سے بھی کم ہو گئی۔ دسمبر 1986 کے بعد یہ ین کی کم ترین قدر ہے۔

جاپان کے کرنسی امور کے سربراہ، نائب وزیر خزانہ برائے بین الاقوامی امور کاندا ماساتو نے بدھ کی رات صحافیوں کو بتایا کہ غیر معمولی ردوبدل کے خلاف ضروری اقدامات کیے جائیں گے۔

لیکن نیویارک ایکسچینج میں ین کی فروخت مسلسل جاری رہی اور ایک مرحلے پر ڈالر کے مقابلے میں اس کی قدر 160 کی اوپری سطح تک گر گئی۔

منڈی ذرائع کے مطابق ین، ڈالر کے مقابلے میں 160.24 کے نشان کو عبور کر چکا ہے، اور بہت سے سرمایہ کار جاپانی اہلکار کے بیان کو کمزور گردانتے ہیں جس سے قیاس آرائی کرنے والوں کو ین کی فروخت تیز کرنے کی ترغیب ملی۔