ٹویوٹا کے چیئرمین کی کمپنی کی تاریخ میں بلند ترین تنخواہ

گاڑی ساز بڑی کمپنی ٹویوٹا موٹر کی ایک رپورٹ کے مطابق کمپنی کے چیئرمین کو مالی سال 2023 میں مشاہرے اور مراعات کی مد میں کمپنی کی تاریخ کی بلند ترین ادائیگی کی گئی ہے۔ ٹیسٹ ڈیٹا اسکینڈل کے باعث مشاہرے میں کٹوتی کے باوجود ان کو کی گئی ادائیگی زیادہ رہی ہے۔

کمپنی نے یہ معلومات مارچ میں ختم ہونے والے مالی سال کے نتائج سے متعلق رپورٹ کے ہمراہ منگل کو جاری کی ہیں۔

کمپنی کے مطابق چیئرمین تویودا آکیو کو معاوضے میں تقریباً 1.6 ارب ین، یا تقریباً 1 کروڑ ڈالر ادا کیے گئے ہیں۔ یہ رقم گزشتہ مالی سال کے مقابلے ین کے لحاظ سے 62 فیصد زیادہ ہے۔

ٹویوٹا، عملے کی تنخواہ کی سطح کا موازنہ مارکیٹ میں زیادہ حصہ رکھنے والی یورپی کمپنیوں سے کرتی ہے۔ اس سے کمپنی کو بین الاقوامی انسانی وسائل کو اپنی جانب متوجہ کرنے میں بہتری آنے کی امید ہے۔

کمپنی نے ایک ایسا نظام بھی اپنایا ہے جو اس کی وسط اور طویل مدتی ترقی میں شراکت کا جائزہ لیتا ہے۔

گاڑیوں کے ٹیسٹ ڈیٹا میں جعلسازی کی وجہ سے ٹویوٹا گروپ توجہ کا مرکز رہا ہے۔ لہذا دیگر عوامل کے ہمراہ کاروباری نظم و نسق سے بھی مشاہرے کا تعین کیا جاتا ہے۔ یاد رہے کہ کمپنی کے چیئرمین اور صدر دونوں کے مشاہروں میں کٹوتی کی گئی ہے۔