کیوتو کے بیودواِن مندر میں 200 سال پرانے بیج سے اگائے گئے کنول

لگ بھگ 200 سال پرانی زمین کی ایک تہہ سے کھدائی کے دوران برآمد ہونے والے بیج سے اگائے گئے کنول کے پھول مغربی جاپان کے کیوتو پریفیکچر کے ایک قدیم بدھ مندر میں اپنی بہار دکھا رہے ہیں۔

اُوجی شہر میں واقع، 11ویں صدی کے اواخر میں ہےاِیان دور سے تعلق رکھنے والے بیودواِن مندر کو یونیسکو کے عالمی ثقافتی ورثے میں شامل کیا گیا ہے۔

مندر کے احاطے میں ہر سال اس موسم میں کنول کے پھولوں کے گملے سجائے جاتے ہیں۔ 50 کے قریب گملوں میں گلابی اور سرخ پھول زائرین کے دیدار کے لیے رکھے گئے ہیں۔

25 سال قبل مندر کے احاطے میں واقع تالاب کی کھدائی کے دوران دریافت ہونے والے بیج سے کامیابی کے ساتھ اگائے گئے کنول کے پھولوں کی اس قِسم کو بیودواِن کہتے ہیں۔ اس کے پھول سفید ہوتے ہیں، جن کی عام طور پر باریک پنکھڑیاں ہوتی ہیں۔ یہ پھول، ہواُو اوو دوو یا فینکس ہال کے قدیم دیواری نقوش سے ملتے جلتے ہیں، جنہیں قومی خزانہ قرار دیا گیا ہے۔

آئندہ ماہ کے وسط سے پہلے تک ان پھولوں کے منظرنامے سے لطف اندوز ہوا جا سکتا ہے۔