جاپانی حکومت کی غیر ملکی شہریوں سے 'ہم آہنگی کے ساتھ بقائے باہمی' کے لائحہ عمل کی تجدید

جاپانی حکومت نے غیر ملکی شہریوں کے لیے جاپان میں رہنے اور کام کرنے کے لیے بہتر ماحول کی تشکیل کی غرض سے نئے اقدامات پر اتفاق کیا ہے۔

یہ اقدام غیر ملکی کارکنوں کے لیے ایک نیا تربیتی پروگرام شروع کرنے کے قانون کے نفاذ کے بعد اٹھایا گیا ہے۔ اس کا مقصد یہ ہے کہ تربیت یافتہ افراد کو اصولی طور پر تین سالوں میں "مخصوص ہنر مند کارکن" کا درجہ حاصل ہو جائے۔

حکومت نے جمعے کے روز متعلقہ وزراء کا اجلاس منعقد کیا۔ انہوں نے مالی سال 2026ء تک کے عرصے کے لیے ایک لائحہ عمل پر نظر ثانی کی تاکہ غیر ملکی شہریوں کے ساتھ، بقول انکے "ہم آہنگ بقائے باہمی پر مبنی معاشرے" کے قیام کوعملی شکل دی جائے۔

نئے لائحہ عمل میں کہا گیا ہے کہ تربیت حاصل کرنے کے خواہشمند غیر ملکیوں کو جاپان پہنچنے سے پہلے جاپانی زبان سیکھنے کے لیے تعاون حاصل کرنا چاہیے۔

ایسے غیرملکیوں کو قبول کرنے والی کمپنیوں سے کہا گیا ہے کہ جاپانی زبان کی انکی مہارت کو بہتر بنانے میں فعال طور پر مدد کرنے کے طریقے تلاش کریں۔

حکومت اس بات کو یقینی بنانے کے لیے ضروری نظام بھی تشکیل دے گی کہ نیا تربیتی پروگرام ہموار انداز میں کام کرے۔