برآمدات میں اضافے کے باوجود جاپان کا مئی میں تجارتی خسارہ

جاپان نے مئی میں مسلسل دوسرے مہینے تجارتی خسارہ ظاہر کیا ہے، حالانکہ اسی مہینے میں برآمدات 45 سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی تھیں۔

اس خسارے کی بڑی وجہ تیل سے متعلقہ مصنوعات کی درآمدات میں اضافہ اور کمزور ین کو قرار دیا گیا ہے۔

وزارت خزانہ نے مئی میں 12 کھرب ین یا تقریباً 7 ارب 70 کروڑ ڈالر کے خسارے کی اطلاع دی ہے۔

برآمدات ایک سال قبل کے مقابلے میں 13.5 فیصد کے اضافے کے ساتھ 52 ارب چالیس کروڑ ڈالر رہیں۔ یہ1979 میں پہلی بار قابل موازنہ اعداد و شمار کی دستیابی کے بعد، ماہِ مئی میں سب سے زیادہ ہیں۔

امریکہ کو گاڑیوں وغیرہ کی برآمدات اور چین کو سیمی کنڈکٹر بنانے کے آلات کی ترسیل میں بھی اضافہ ہوا۔

درآمدات 9.5 فیصد کے اضافے کے ساتھ 60 ارب ڈالر سے زائد رہیں۔ اس کی وجہ سینتھیٹِک ربڑ میں استعمال ہونے والی نَفتھا جیسی پٹرولیم مصنوعات ہیں۔ ین کی قدر میں گراوٹ نے تیل پر مبنی برآمدات کی لاگت میں اضافہ کیا، جن کی قیمت عام طور پر ڈالروں میں ہوتی ہے۔