جاپانی سرکاری رپورٹ، اے آئی میں مزید سرمایہ کاری

سرکاری حکام کے مطابق جاپان کو مصنوعی ذہانت، اے آئی، کی عالمی دوڑ میں ہم پلہ رہنے کے لیے مزید اقدامات کی ضرورت ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ بیرون ملک حریف کمپنیوں سے مسابقت کے لیے مقامی کمپنیوں کو مزید اعانت کی ضرورت ہے۔

حکام نے رواں سال کے قرطاس ابیض میں ٹیکنالوجی، سائنس اور اختراع کے بارے میں میں کئی سفارشات پیش کی ہیں۔ جاپان کی کابینہ نے منگل کو ان سفارشات کی منظوری دی ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ امریکہ اور چین نے 2020 کی دہائی میں اے آئی کے شعبے میں بڑی پیشرفت کی۔ رپورٹ کے مطابق چین میں حکومت نے تحقیق اور ترقی کے لیے اسٹریٹجک تعاون کی پیشکش کی ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جاپانی کمپنیوں کو محققین اور سرمائے کی قلت سمیت زیادہ مشکلات کا سامنا ہے۔

رپورٹ کے مطابق اس عدم توازن کو دور کرنے کے لیے جاپان کو تحقیق و ترقی میں مزید سرمایہ کاری اور مزید ماہرین کو پروان چڑھانے کے لیے مسلسل کوششوں کی ضرورت ہے۔ اس میں جاپان اور بیرون ملک سے تعلق رکھنے والے اعلی محققین کے درمیان مضبوط تعلقات قائم کرنے پر بھی زور دیا گیا ہے۔ رپورٹ میں کام کے دوران اے آئی استعمال کرنے والے محققین کے لیے مزید اعانت فراہم کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔