اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل نے غزہ میں جنگ بندی کی قرارداد منظور کر لی

اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل نے ایک قرارداد منظور کی ہے جس میں اسرائیل اور حماس دونوں پر زور دیا گیا ہے کہ وہ جنگ بندی کیلئے امریکی صدر جو بائیڈن کے اعلان کردہ نئے منصوبے پر متفق ہوں۔

بائیڈن نے 31 مئی کو تین مراحل پر مشتمل ایک تجویز کا اعلان کیا تھا، جس میں غزہ کی پٹّی میں چھ ہفتے کی جنگ بندی اور یرغمالیوں کی رہائی شامل ہے۔

امریکہ نے سلامتی کونسل میں ایک قرارداد کا مسودہ پیش کیا جس میں اس تجویز کی حمایت کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

جاپان اور چین سمیت سلامتی کونسل کے 15 میں سے 14 ارکان نے قرارداد کو منظور کرنے کے حق میں پیر کے روز ووٹ دیا۔ روس نے اپنا وِیٹو استعمال نہیں کیا اور اُس نے رائے دہی میں حصہ لینے سے گریز کیا۔

اب توجہ اس بات پر مرکوز ہے کہ آیا یہ قرارداد دونوں فریقوں پر جنگ بندی کے معاہدے پر پہنچنے کے لیے دباؤ ڈال سکے گی یا نہیں۔