میکرون اور بائیڈن کا یوکرین کی حمایت کیلیے یکجہتی کا اعادہ

فرانس کے صدر ایمانوئل میکرون نے یوکرین کی مدد کے سلسلے میں دیگر مغربی ممالک کے ساتھ اپنے ملک کی یکجہتی پر زور دیا ہے۔

صدر میکرون نے ہفتے کے روز پیرس میں امریکی صدر جو بائیڈن سے بات چیت کی، اس سے ایک دن پہلے انہوں نے یوکرین کے صدر وولودیمیر زیلنسکی سے ملاقات کی تھی۔

صدر میکرون نے ایک مشترکہ نیوز کانفرنس میں زور دے کر کہا کہ فرانس، امریکہ اور دیگر مغربی ممالک کو یورپ کی سلامتی اور استحکام کے تحفظ کے لیے یوکرین کو مدد فراہم کرنا جاری رکھنا چاہیے۔

فرانسیسی صدر نے نشاندہی کی کہ گزشتہ چند مہینوں سے مغربی طاقتوں نے یوکرین کو اختیار دے دیا ہے کہ وہ مغرب کے فراہم کردہ ہتھیاروں سے روسی سرزمین کے اندر اہداف پر حملہ کرے اور ممالک کا ایک اتحاد بنانے کا منصوبہ بنایا ہے جو یوکرین میں افواج کو تربیت دینے کے لیے فوجی انسٹرکٹر بھیجے گا۔

صدر میکرون نے امید ظاہر کی کہ سات ممالک کے گروپ جی سیون کے رہنماء 13 جون کو اٹلی میں شروع ہونے والے سربراہ اجلاس میں یوکرین کی حمایت کا بھی عہد کریں گے۔

صدر بائیڈن نے کہا: "پوٹن یوکرین پر ہی ٹھہرنے والے نہیں ہیں۔ یہ صرف یوکرین نہیں ہے۔ یہ یوکرین سے کہیں زیادہ ہے۔ پورے یورپ کو خطرہ لاحق ہو جائے گا"۔

انہوں نے مزید کہا کہ "امریکہ یوکرین کے ساتھ ڈٹ کر کھڑا ہے۔ ہم اپنے اتحادیوں کے ہمراہ کھڑے ہیں"۔