ذرائع نے جاپان یوکرین امدادی دستاویز کی تفصیلات منکشف کر دیں

NHK نے ایک دوطرفہ دستاویز کی تفصیلات جانی ہیں جس میں وہ اقدامات دیے گئے جو جاپان یوکرین کو امداد دینے کے لیے کرے گا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ جاپانی حکومت اگلے ہفتے گروپ آف سیون کے سربراہی اجلاس کے موقع پر یوکرین کے ساتھ اس دستاویز پر دستخط کرنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔

13 جون سے اٹلی میں ہونے والے G7 سربراہی اجلاس کے موقع پر اطلاعات کے مطابق وزیراعظم کشیدا فومیو اور صدر ولودیمیر زیلنسکی کے درمیان بات چیت اور دستاویز پر دستخط کرنے کے انتظامات جاری ہیں۔

NHK کو معلوم ہوا ہے کہ دستاویز میں کہا گیا ہے کہ جاپان ملک کے آئین کے فریم ورک کی حدود کے اندر رہتے ہوئے یوکرین کو سیکیورٹی اور دفاعی امداد فراہم کرتا رہے گا۔

ان اقدامات میں غیر مہلک آلات اور سامان کی فراہمی، زخمی یوکرینی فوجیوں کا علاج اور انٹیلی جنس کے شعبے میں تعاون شامل ہے۔

جہاں تک تعمیر نو کا تعلق ہے، اس دستاویز میں توقع ہے کہ جاپان بارودی سرنگوں کو ہٹانے، خواتین اور بچوں کے لیے انسانی صورتحال کو بہتر بنانے اور ان کی زندگیوں کی تعمیر نو اور زرعی شعبے کی ترقی میں مدد فراہم کرے گا۔

یہ دستاویز 10 سال کے لیے موثر ہو گی اور یوکرین کے لیے جاپان کی مسلسل حمایت کی تصدیق کرے گی۔

گزشتہ جولائی میں، جاپان سمیت 30 سے ​​زائد ممالک نے روس کے جاری حملے کے دوران یوکرین کے لیے حمایت کو واضح شکل دینے کے لیے دو طرفہ معاہدے کرنے کا وعدہ کیا تھا۔ اطلاعات کے مطابق اب تک 15 ممالک یوکرین کے ساتھ دستاویزات پر دستخط کر چکے ہیں۔