کیمرون کے سابق رہنما اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے نئے صدر منتخب

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی نے کیمرون کے سابق وزیراعظم فلیمون یان کو اپنا اگلا صدر منتخب کر لیا ہے۔ ان کی ایک سالہ مدت ستمبر میں شروع ہو گی۔

جمعرات کے روز ایک تقریر میں جناب یان نے کہا کہ جغرافیائی سیاسی کشیدگی کے باعث ریاستوں کے درمیان بےاعتمادی میں اضافہ اور ہتھیاروں کی دوڑ میں تیزی مسلسل جاری ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ دنیا کے مختلف خطوں میں تنازعات میں اضافہ ہو رہا ہے جن میں شہریوں کو ناقابل برداشت نقصان پہنچ رہا ہے، اور "غزہ اور یوکرین کے معاملات اس کی بہت تکلیف دہ مثالیں ہیں"۔

اسمبلی نے جنوری 2025 سے دو سال کی مدت کے لیے سلامتی کونسل کے پانچ غیر مستقل ارکان کا انتخاب بھی کیا۔ دنیا کے ہر خطے کی نمائندگی کرنے والے امیدواروں میں سے ڈنمارک، یونان، پاکستان، پاناما اور صومالیہ کو منتخب کیا گیا ہے۔ پاکستان اگلے سال سے ایشیا بحرالکاہل کے نمائندے کے طور پر جاپان کی جگہ لے گا۔

یوکرین پر روس کے حملے، اور اسرائیل اور حماس کے درمیان لڑائی کے ماحول میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی اور سلامتی کونسل، شدت پکڑتی محاذ آرائی اور تفاوت کو ختم کرنے کے طریقے تلاش کر رہی ہے۔