اسرائیل کا غزہ میں اقوام متحدہ کے اسکول پر حملہ

اسرائیل کا کہنا ہے کہ اس نے وسطی غزہ کی پٹی میں اقوام متحدہ کے ایک اسکول پر فضائی حملہ کیا ہے۔ انکلیو کے صحت کے حکام کا کہنا ہے کہ حملے میں 40 افراد ہلاک ہوئے، جن میں 14 بچے اور 9 خواتین شامل ہیں۔

غزہ میں اسرائیل اور حماس کے درمیان جاری تنازعے کو آٹھ ماہ مکمل ہونے کے موقع پراسرائیلی فوج نے جمعرات کو اس حملے کا اعلان کیا۔

اسرائیلی فوج نے کہا کہ اس کے لڑاکا طیاروں نے نصیرات کے علاقے میں واقع UNRWA اسکول کے اندر واقع حماس کے ایک کمپاؤنڈ پر انتہائی درست نشانے لگائے۔ UNRWA فلسطینی پناہ گزینوں کے لیے اقوام متحدہ کا ادارہ ہے۔

فوج نے کہا کہ حملے میں حماس کے کئی جنگجو مارے گئے ہیں۔ اس نے زور دیا کہ حملے کے دوران غیر متعلقہ شہریوں کو نقصان پہنچنے کا خطرہ کم کرنے کے لیے "کئی اقدامات" کیے گئے تھے۔

UNRWA کے کمشنر جنرل فلپ لازارینی نے ایک سوشل میڈیا پوسٹ میں حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ جب یہ حملہ ہوا، اُس وقت اسکول نے 6,000 بے گھر افراد کو پناہ دے رکھی تھی۔

انہوں نے لکھا کہ اقوام متحدہ کی عمارتوں پر حملہ کرنا، ان کو نشانہ بنانا یا فوجی مقاصد کے لیے استعمال کرنا بین الاقوامی انسانی قانون کی صریحاً نظر اندازی کا عکاس ہے۔