گاڑیوں کا ٹیسٹ ڈیٹا اسکینڈل، حکام کا سُوزُوکی میں تحقیقات کا آغاز

سرکاری حکام نے ٹیسٹ ڈیٹا میں ہیر پھیر کے اسکینڈل کے سلسلے میں وسطی جاپان میں سُوزُوکی موٹر کے صدر دفتر میں آن سائٹ تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔ دریں اثناء دیگر گاڑی ساز اداروں نے اپنے کئی کارخانوں میں پیداوار معطل کرنے کا عمل شروع کر دیا ہے۔

وزارت ٹرانسپورٹ کے تین اہلکار جمعرات کے روز شیزُواوکا پریفیکچر میں سُوزُوکی کے صدر دفتر پہنچے۔ گاڑیاں وغیرہ تیار کرنے والی یہ تیسری کمپنی ہے جہاں تحقیقات کا آغاز کیا گیا ہے۔

یہ اقدام، رواں ہفتے کے اوائل میں اس انکشاف کے بعد کیا گیا ہے کہ سُوزُوکی اور چار دیگر جاپانی گاڑی ساز کمپنیوں نے بڑے پیمانے پر پیداوار کے لیے درکار سرٹیفیکیشن حاصل کرنے کے لیے کارکردگی کے ٹیسٹوں میں جعلسازی کی تھی۔

وزارت کے اہلکار ٹیسٹ ڈیٹا ریکارڈ کی جانچ پڑتال، اور منتظمین اعلیٰ کے ساتھ ساتھ ٹیسٹنگ کے ذمہ دار اہلکاروں کے انٹرویو کر رہے ہیں۔

سُوزُوکی نے تصدیق کی ہے کہ اس نے 2014 میں آلٹو گاڑی کے ایک ماڈل کے بریک ٹیسٹ کے نتائج میں ہیرا پھیری کی تھی۔ مذکورہ ماڈل اب تیار نہیں کیا جاتا۔