کوڑا کرکٹ بھرے غباروں کی آمد، صدر یُون کی تنقید

جنوبی کوریا کے صدر یُون سون نیئول نے بظاہر شمالی کوریا کی جانب سے کوڑا کرکٹ بھرے غبارے سرحد پار بھجوائے جانے کے حوالے سے پیونگ یانگ پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ’’ایک ایسی نفرت انگیز اشتعال انگیزی ہے جس پر کسی بھی ملک کو اپنے وجود پر شرمندگی محسوس کرنی چاہیے‘‘۔

جناب یُون نے جمعرات کو سیئول کے قومی قبرستان میں میموریل ڈے کی تقریر میں یہ بیان دیا۔ یہ دن جنگوں میں ہلاک ہونے والوں کی یاد میں منایا جاتا ہے۔ ان میں وہ افراد بھی شامل ہیں جو کوریا کی جنگ میں ہلاک ہوئے تھے۔

یُون نے کہا، ’’یہاں سے صرف 50 کلومیٹر کی دوری پر ہمارے ہم وطن بھوک کا شکار ہیں اور اُن کی آزادی اور انسانی حقوق کو بے دردی سے روندا جا رہا ہے‘‘۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ’’شمالی کوریا کی حکومت تاریخ کے ارتقاء کو قبول کرنے سے انکاری ہے اور اس کے بجائے ہماری جانوں کو خطرے میں ڈال کر ایک اُلٹے راستے پر گامزن ہے‘‘۔ صدر یُون نے مزید کہا کہ ان کی حکومت ’’شمالی کوریا کے خطرے کو کبھی نظر انداز نہیں کرے گی‘‘۔