حفاظتی ٹیسٹ اسکینڈل کے بعد گاڑیوں کی پیداوار، ترسیلات معطل

گاڑیوں کے حفاظتی ٹیسٹ اسکینڈلوں میں ملوّث پانچ جاپانی کمپنیوں میں سے دو کا کہنا ہے کہ وہ متاثرہ نمونوں کی گاڑیوں کی پیداوار معطل کر دیں گی۔

ٹویوٹا موٹر مِیاگی اور اِیواتے پریفیکچروں میں قائم کارخانوں میں جمعرات کے روز سے اپنی کرولا فیلڈر اور دیگر دو نمونوں کی گاڑیوں کی پیداوار بند کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ اس کمپنی نے مارچ میں ختم ہونے والے مالی سال میں جاپان میں اِن نمونوں کی تقریباً 120,000 گاڑیاں فروخت کی تھیں۔

مزدا، ہیروشیما اور یاماگُچی پریفیکچروں میں قائم کارخانوں میں اپنی روڈسٹر آر ایف، اور ایک اور گاڑی کی پیداوار معطل کرنے والی ہے۔

مارچ تک کے سال میں مذکورہ دونوں نمونوں کی تقریباً 18,000 گاڑیاں فروخت کی گئی تھیں۔

دریں اثناء، پتہ چلا ہے کہ یاماہا نے تین قسم کی موٹرسائیکلوں پر شور کے ٹیسٹ نامناسب حالات میں کیے۔ اس کمپنی نے ایک نمونے YZF-R1 کی ترسیلات معطل کر دی ہیں۔

ان اسکینڈلوں کے مقامی معیشتوں اور کاروباری شراکت داروں پر پڑنے والے اثرات کے بارے میں تشویش بڑھ رہی ہے۔

ٹویوٹا کی ذیلی کمپنی، دائی ہاتسُو موٹر نے گزشتہ سال دسمبر میں حفاظتی اسکینڈل سامنے آنے کے بعد پیداوار روک دی تھی، جس سے ہزاروں فراہم کنندگان کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

جاپان کی اقتصادی ترقی کے تازہ ترین اعداد و شمار دو سہ ماہیوں میں پہلی بار گرنے کی ایک بڑی وجہ یہی تھی۔