ناگاساکی امن تقریب میں اسرائیلی سفیر نہ بلانے کا فیصلہ

ناگاساکی شہر کے ناظم نے جاپان میں اسرائیلی سفیر کو شہر پر امریکی ایٹم بم حملے کے موقع پر ہونے والی سالانہ تقریب میں مدعو نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

شہر کے ناظم سوزوکی شِیرو نے پیر کو ایک نیوز کانفرنس میں اپنے فیصلے کی وضاحت پیش کی۔

انہوں نے کہا کہ غزہ کی پٹی میں سنگین انسانی صورتحال کے ساتھ ساتھ اس بحران کے بارے میں دنیا بھر کے لوگوں کے تاثرات کو دیکھتے ہوئے انہوں نے یہ مشکل فیصلہ کیا ہے۔

جناب سوزوکی نے کہا کہ 9 اگست کی تقریب میں غیر متوقع واقعات کے خطرے کو رد نہیں کیا جا سکتا۔ انہوں نے کہا کہ اس تقریب کا مقصد ایٹم بم کے متاثرین کا سوگ منانا ہے، اس لیے کسی قسم کا خلل برداشت نہیں کیا جا سکتا۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ اس کے بجائے جاپان میں اسرائیلی مندوب کو ایک مراسلہ روانہ کیا جائے گا جس میں غزہ میں تشدد کو فوری طور پر روکنے کا مطالبہ کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ناگاساکی شہر ہمیشہ کی طرح جاپان میں فلسطینی مندوب کو دعوت نامہ ارسال کرے گا۔