جنوبی کوریا، تیل اور گیس کی تلاش کے لیے کھدائی شروع کرے گا

جنوبی کوریا کے صدر یُن سون نیئول نے انکشاف کیا ہے کہ ملک کے جنوب مشرق میں زیرِ سمندر تیل اور گیس کے بڑے ذخائر کی موجودگی کا امکان ہے۔

صدر نے پیر کے روز صحافیوں کو بتایا کہ یہ مقام جنوب مشرقی شہر پوہانگ کے آس پاس سمندر میں ہے۔

صدر یُن نے کہا، "حالیہ نتائج نشاندہی کرتے ہیں کہ 14 ارب بیرل تیل اور گیس کے ذخائر پائے جانے کا قوی امکان ہے"۔

انہوں نے کہا کہ اس سے جنوبی کوریا کی 29 سال تک گیس کی اور چار سال تک تیل کی طلب پوری ہو سکتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ نتائج کی تصدیق معروف تحقیقی اداروں اور ماہرین نے کی ہے۔

صدر یُن نے یہ بھی کہا کہ انہوں نے کھدائی کے منصوبے کی منظوری اسی روز دے دی ہے اور آئندہ سال کی پہلی ششماہی تک کچھ نتائج متوقع ہیں۔

جنوبی کوریا کی یونہاپ نیوز ایجنسی نے اطلاع دی ہے کہ وہ علاقہ جہاں تیل اور گیس کے ذخائر پائے جانے کا امکان ہے وہ ملک کے خصوصی اقتصادی زون میں ہے۔

جنوبی کوریائی حکومت نے کہا ہے کہ تحقیقی کھدائی کے ذریعے ذخائر کی تصدیق کے بعد 2035ء کے آس پاس تجارتی پیشرفت شروع ہو سکتی ہے۔