زلزلہ زدہ اِشی کاوا کی تعمیر نو کے لیے حکومت کا 33 کروڑ ڈالر فراہم کرنے کا فیصلہ

اِشی کاوا پریفیکچر میں یکم جنوری کو آنے والے زلزلے سے شدید نقصانات ہوئے تھے جن کی تلافی میں اعانت کے لیے جاپانی حکومت نے 30 کروڑ ڈالر سے زیادہ کی مالی امداد فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

حکومت نے یہ فیصلہ جمعہ کے روز جزیرہ نما نوتو کے زلزلے سے متعلق ٹاسک فورس کے اجلاس میں کیا۔ وزیراعظم کشیدا فومیو اور آفات سے نمٹنے کے وزیر ماتسُومُورا یوشی فُومی نے اجلاس میں شرکت کی۔

حکام نے تعمیر نو کے اُس فنڈ کے لیے 52 ارب ین یا تقریباً 33 کروڑ ڈالر فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے جو اِشی کاوا پریفیکچر کی جانب سے قائم کیا جا رہا ہے۔ یہ رقم مقامی حکومتوں کی خصوصی ضروریات کے لیے مختص ٹیکس محصولات سے دی جائے گی۔

توقع ہے کہ اس فنڈ کو پریفیکچر میں مکانات کی تعمیر نو اور بنیادی ڈھانچے کی بحالی جیسے ضروری منصوبوں کو لچکدار انداز سے پایہ تکمیل تک پہنچانے کے لیے استعمال کیا جائے گا۔

حکام نے امدادی کاموں میں تیزی لانے کے لیے نیگاتا اور تویاما پریفیکچرز کے لیے اسی قسم کے فنڈز فراہم کرنے پر بھی اتفاق کیا ہے۔ زلزلے کے نتیجے میں اِن دونوں پریفیکچرز میں زیر زمین پانی باہر آ جانے سے نقصانات ہوئے ہیں۔