جاپان میں دو ایٹمی ریکٹروں کی مدت میں 20 سال کی توسیع

جاپان کے جوہری نگران ادارے نے کانسائی الیکٹرک پاور کمپنی کی اُس درخواست کو منظور کرتے ہوئے وسطی جاپان میں تاکاہاما پلانٹ کے دو پرانے ری ایکٹروں کی مدتِ فعالیت میں بیس سال کی توسیع دے دی ہے۔

نیوکلیئر ریگولیشن اتھارٹی ’’این آر اے‘‘ نے، کمپنی کی جانب سے درخواست پر یہ فیصلہ بدھ کو ہونے والے ایک اجلاس میں کیا۔

جاپان میں جوہری ری ایکٹروں کی آپریشنل مدت اصولی طور پر 40 سال تک محدود کردی گئی ہے۔ تاہم اِس میں بیس سال تک کی توسیع کی جا سکتی ہے۔

فُوکُوئی پریفیکچر میں تاکاہاما پلانٹ کے ریکٹر نمبر تین اور چار اگلے برس 40 سال کی حد تک پہنچ جائیں گے۔

اجلاس میں ’’این آر اے‘‘ کے سیکریٹریٹ نے بتایا کہ ری ایکٹروں اور دیگر اہم آلات کے خراب ہونے یا نہ ہونے کے بارے میں جاننے کے لیے مناسب طریقے سے خصوصی جانچ کی گئی ہے۔ عہدیداروں نے کہا کہ دونوں ری ایکٹر توسیع کی اجازت دینے کے لئے مقررہ معیارات پر پورا اترتے ہیں۔

این آر اے کے کسی کمشنر کو اِس رپورٹ پر اعتراض نہیں تھا۔ انہوں نے متفقہ طور پر اِس توسیع کی منظوری دی۔

اِس تازہ ترین اقدام کے ساتھ، اب تک جاپان میں آٹھ جوہری ری ایکٹروں کو 40 سال کی حد سے زیادہ کام کرنے کی اجازت دی جا چکی ہے۔